Best Urdu ghazal | Ek Taza Hikayat hai sunlo - SaimWrites

Ek Taza Hikayat hai sunlo

Best Urdu ghazal | Ek Taza Hikayat hai sunlo

Urdu Ghazal in Roman English 

Ek shakhs ko chaha tha,
Taaron ki tarha humne
Ek shakhs ko chaha tha,
Apno ki tarha humne
Ek shakhs ko samjha tha,
Phoolon ki tarha humne
Wo shakhs qayamat tha kea,
Uski karein batein
 
Din us ke liye paida, Aur
Uski hi thi ratein
Kum milta kisi se tha,
Hum say thi mulaqatein
 
Rung uska shahabi tha,
Zulfon mein thi mehkarein
Aankhen theen ke jadu tha,
Palken theen ke Talwaaren
 
Dushman bhi ager dekhey,
So jaan say dil harain
Kuch Tumse wo milta tha,
Baton mein shabahat thi
 
Haan tumsa hi lagta tha,
Shokhi mein Sharart mein
Lagta bhi tumhi sa tha,
Dastoor e Mohabbat mein
 
Wo shakhs aik din humen,
Apno ki tarha bhoola,
Taaron ki tarha dooba,
Phoolon ki tarha toota,
Phir hath na aya wo,
Humne to bohut dhunda!
 
Tum kis liye chonkey ho ?
Tum kis liye chonkey ho! Kab ziker tumhara hai
Kab tumse takaza hai, Kab tumse shikayat hai
 
Ek Taza Hikayat hai sunlo, To inayat hai
 
Ek Shakhs ko chaha tha,
Taaron ki tarha humne
Ek shakhs ko chaha tha,
Apno ki tarha humne
 
Ek Taza Hikayat hai sunlo, To inayat hai..

Urdu Ghazal in Urdu Text 


اک شخص کو چاہا تھا ،
تاروں کی طرح ہم نے
اک شخص کو چاہا تھا ،
اپنوں کی طرح ہم نے

اک شخص کو سمجھا تھا ،
پھولوں کی طرح ہم نے
وہ شخص قیامت تھا کیا ،
اسکی کریں باتیں

دن اس كے لیے پیدا ، اور
اسکی ہی تھی راتیں
کم ملتا کسی سے تھا ،
ہم سے تھی ملاقاتیں

رنگ اسکا شہابی تھا ،
زلفوں میں تھی میحکارئین
آنکھیں تھیں كے جادو تھا ،
پلکیں تھیں كے تالوارین

دشمن بھی اگر دیکھے ،
سو جان سے دِل ہاریں
کچھ تم سے وہ ملتا تھا ،
باتوں میں شباہت تھی

ہاں تم سا ہی لگتا تھا ،
شوخی میں شرارت میں
لگتا بھی تمہی سا تھا ،
دستور محبت میں

وہ شخص ایک دن ہمیں ،
اپنوں کی طرح بھولا ،
تاروں کی طرح ڈوبا ،
پھولوں کی طرح ٹوٹا ،
پِھر ہاتھ نا آیا وہ ،
ہم نے تو بہت ڈھونڈا !

تم کس لیے تلواریں ہو ؟
تم کس لیے تلواریں ہو ! کب ذکر تمہارا ہے
کب تم سے تقاضہ ہے ، کب تم سے شکایت ہے

اک تازہ حکایت ہے سن لو ، تو عنایت ہے

اک شخص کو چاہا تھا ،
تاروں کی طرح ہم نے
اک شخص کو چاہا تھا ،
اپنوں کی طرح ہم نے

اک تازہ حکایت ہے سن لو ، تو عنایت ہے . .

Post a Comment

0 Comments